کیا پنجاب میں مارشل لا ایڈمنسٹریٹر لگا دوں، وزیراعظم

کیا پنجاب میں مارشل لا ایڈمنسٹریٹر لگا دوں، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے اتوار کو تحریک انصاف کے ارکان قومی اسمبلی سے ملاقات کی جس میں ایم این ایز نے وزیراعلیٰ پنجاب کے خلاف شکایت کی جبکہ وزیراعظم نے شکایات مسترد کرتے ہوئے کہا کہ بزدار کے ساتھ پنجاب حکومت بھی جائے گی۔
اجلاس میں شریک ذرائع کے مطابق رکن قومی اسمبلی راجا ریاض نے وزیراعظم سے کہا کہ آپ کو یہ سب اچھا کی رپورٹ دے رہے مگر حالات ٹھیک نہیں ہیں۔ بعض ارکان اسمبلی نے بتایا کہ پنجاب میں گورننس بہتر نہیں ہے۔ عثمان بزدار کو با اختیار بنایا جائے۔
جس پر وزیراعظم نے جواب دیا کہ عثمان بزدار بااختیار ہے۔ اس سے زیادہ کیا پنجاب میں مارشل لا ایڈمنسٹریٹر لگا دوں۔
عمران خان نے کہا کہ بزدارکے خلاف سازشیں کرنے والے خود وزیراعلی بننا چاہتے ہیں۔ یہ گروپس کیسے بنتے ہیں۔ کون کون وزیراعلیٰ کا امیدوار ہے، میں سب جانتاہوں۔ اگر عثمان بزدار وزیراعلی نہ رہے تو پنجاب حکومت بھی  نہیں رہے گی۔
واضح رہے کہ پنجاب اور خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف کے اپنے اور اتحادی ارکان نے وزرائے اعلیٰ کی کارکردگی پر سوالات اٹھاتے ہوئے الگ گروپس بنائے ہیں اور کرپشن کے الزامات بھی عائد کیے ہیں۔
خیبر پختونخوا میں وزیراعلیٰ کے خلاف مبینہ سازش اور پارٹی میں گروپ بندی کے الزام میں 3 وزرا کو فارغ کیا گیا ہے جبکہ 9 ارکان صوبائی اسمبلی کے خلاف بھی کارروائی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔  فارغ کیے جانے والے وزاراء میں وزیرِ صحت شہرام خان ترکئی، سینیر وزیرِ کھیل، ثقافت اور سیاحت عاطف خان اور وزیرِ ریونیو، اسٹیٹ شکیل احمد شامل ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

Turkey, Russia agree on cease-fire in Idlib, Syria

Two states agree upon additional ...